1. Brandenburger Tor جرمنی میں خوش آمدير
  2. VIS - Visa Information System آن لائن اپائنٹمنٹ سسٹم
Brandenburger Tor

جرمنی میں خوش آمدير

برانڈن برگر ٹور۔ یہ ہے جرمنی ، خیالات کی سرزمین، جہاں ہم سب سے زیادہ زور تعلیم، سا‏ئنس، تحقیق اور ترقی پر دیتے ہیں۔ یہی وجہ ہےکہ جرمنی کا شمار ان ممالک میں ہوتا ہے جو حصول تعلیم کے ساتھ ساتھ جدید ترین تحقیق اور حقیقی ترقی کے حوالے سےسب سے زیادہ مقبول ہیں۔  اپنے بلند معیار زندگی، عمدہ بنیادی ڈھانچے اور یورپ میں مرکزی محل وقوع کی بدولت جرمنی کا کاروبار کے انتہائ پرکشش مقعمات میں شمار ہوتا ہے۔ اس کے خوبصورت اور دیدہ ز‏یب شہرودیہات، مدتوں پرانی روایات اور نت نئے تجربات پر مبنی جدید ثقافت،جرمنی آنے والوں کے سفر کو یادگار بنا دیتے ہیں۔ آپ کوئ بھی ہوں، جرمنی میں آپ کے لیے کچھ نہ کچھ ضرور ملے گا۔ لہذا آئیے، ہمیں میزبانی کا ایک موقہ ضرور دیجئے۔‎‌

VIS - Visa Information System

آن لائن اپائنٹمنٹ سسٹم

سفارت خانے سے ویزا کے حصول، اسناد وغیرہ کی تصدیق اور پاسپورٹ کے سلسے میں آپائنٹمنٹس صرف آن لائن حاصل کی جاسکتی ہیں۔ اس سلسلے میں صرف اپنا موجودہ پاسپورٹ نمبر استعمال کریں۔ مختلف پاسپورٹ نمبروں کے ساتھ ایک سے زیادہ آپائنٹمنٹس حاصل کرنے کی کسی بھی کوشش کے نتیجے میں آپ کی درخواست مسترد کر دی جائے گی۔ برائے مہربانی اس بات کا خیال رکھیں کہ آپ کا پاسپورٹ نمبر، آپ کا ای میل پتہ وغیرہ درست طریقے سے پر کیا جائے،بصورت دیگر آپ کو آپا‏ئنٹمنٹ نہیں مل پائے گی۔

مشہور جرمن کمپنی آڈی کا سندھ میں کارسازی کے شعبے میں سرمایہ کاری میں دلچسپی کا اظہار

مشہور جرمن کمپنی آڈی اے جی اور سندھ بورڈ آف انویسمینٹ نے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کيے ہیں۔ اس یادداشت کے تحط آڈی وفاقی و تجارتی پالیسیوں اور قانونی و اقتصادی امکانات کا جائز لے گی۔ جسکے بعد اپنے تقسیم کار، پر‏‏یمیئر سسٹم کے ذریعے کارسازی کا کارخانہ لگانے کا فیصلہ کرے گی۔ 

مفاہمت کی یادداشت پر سندھ بورڈ آف انویسمینٹ کی جانب سے متحرمہ ناہید میمن اور آڈی کے مارٹن برکنر نے دستخط کیے۔ اس موقع پر کراچی میں جرمنی کے قونصل جنرل جناب را‏ئنر شمیڈشن اور پر‏‏یمیئر سسٹم کے جناب ارشد رضا بھی موجود تھے۔
‎‎‌‎‎

جنوبی ایشیا ریجن میں 2 نومبر 2015 سے ویزا انفارمیشن سسٹم کا اجراء


جنوبی ایشیا ریجن بشمول پاکستان میں ویزا انفارمیشن سسٹم کے اجراء پر مختصر معلوماتی دستاویز کے لئے  

نیچے دئیے گئے لنک پر جا کر تفصیلی معلومات حاصل کریں۔ (دیکھیں نیچے دیا گیا لنک)۔

http://eeas.europa.eu/delegations/pakistan/documents/press_corner/20151012_01_en.pdf
2 نومبر 2015 سے ویزا انفارمیشن سسٹم جنوبی ایشیا کے تمام ممالک میں کام شروع کر دے گا۔
ویزا انفارمیشن سسٹم کے سلسلے میں درخواست گزاروں کو شنجن ویزا کے لئے درخواست دیتے وقت اپنا بائیومیٹرک ڈیٹا (انگلیوں کے نشان اور نئی بائیومیٹرک تصویر) فراہم کرنا ہو گا۔ یہ ایک سادہ سا طریقہ کار ہے جسے مکمل کرنے کے لئے محض چند منٹ درکار ہیں۔ بائیومیٹرک ڈیٹا اور شنجن ویزا درخواست فارم میں فراہم کیا گیا ڈیٹا ویزا انفارمیشن سسٹم کے مرکزی ڈیٹابیس میں درج کر لیا جائے گا۔

نئی بات:
لہٰذا 2 نومبر 2015 سے ویزا کے تمام درخواست گزاروں کو اپنی ویزا درخواست دیتے وقت اپنی انگلیوں کے نشان فراہم کرنے کے لئے ذاتی طور پر پیش ہونا ہو گا۔
درج ذیل افراد انگلیوں کے نشان کی شرط سے مستثنیٰ ہوں گے:
* بارہ سال سے کم عمر بچے۔
* (معذور) افراد جن کے لئے انگلیوں کے نشان دینا ناممکن ہو۔
* سربراہان مملکت اور وفاقی حکومت کے ارکان، ان کے ہمراہ ان کے شریک حیات اور ان کے سرکاری وفد کے ارکان جب انہیں رکن ریاستوں کی حکومتوں یا بین الاقوامی تنظیموں کی جانب سے سرکاری مقصد کے لئے مدعو کیا جائے۔

جرمن سفارت خانہ اسلام آباد فیس بک پے

فیس بک پے ہمیں لائک کریں

کراچی قونصلیٹ جنرل فیس بک پے

فیس بک پے ہمیں لائک کریں

نئ جرمن سفیر

Botschafterin

  وفاقی جمہوریہ جرمنی کی نئی سفیر ائینا لیپل نے اپنی اسناد 21 اگست 2015 کو صدر حسین کو پیش کیں ۔ ان کے بارے میں کچھ مزید معلومات یہاں ہیں۔

کونصل جنرل رائنر شمیڈشن

Generalkonsul Hr. Rainer Schmiedchen

 رائنر شمیڈشن